Hamza Ali Abbasi is an actor, director, and former civil servant

In BIOGRAPHY
May 10, 2023
Hamza Ali Abbasi is an actor, director, and former civil servant

Hamza Ali Abbasi is an actor, director, and former civil servant

Hamza Ali Abbasi is a Pakistani actor, filmmaker, and television host. He was born on June 23, 1984, in Multan, Pakistan. He began his career as a theater actor and later transitioned to television and film. Some of his notable television dramas include Pyarey Afzal, Mann Mayal, and Alif. He has also acted in films such as Waar, Parwaaz Hai Junoon, and Maula Jatt 2.

In addition to his acting career, Hamza Ali Abbasi is also known for his political activism and social commentary. He has been vocal on various social and political issues in Pakistan and has hosted several talk shows and debates on television. He has also written articles and blogs on topics such as religion, politics, and social justice.

Hamza Ali Abbasi has won several awards for his acting, including the Lux Style Award for Best TV Actor and Best Supporting Actor. He is considered one of the most popular and talented actors in Pakistan’s entertainment industry.

Early Life and Education

Hamza Ali Abbasi was born on June 23, 1984, in Multan, Pakistan, to a Punjabi Muslim family. He grew up in various cities in Pakistan, including Lahore and Rawalpindi, due to his father’s job in the civil services. Hamza completed his early education in Rawalpindi and then went on to attend Fazaia Inter College, Islamabad for his higher secondary education.

After completing his intermediate education, Hamza Ali Abbasi went to the United States to pursue a Bachelor’s degree in International Relations from the University of Colorado, Denver. He then returned to Pakistan and completed his Master’s in International Relations from Quaid-i-Azam University in Islamabad.

During his time at university, Hamza developed a keen interest in acting and theater. He participated in various university theater productions and was also a member of the university’s drama club. This led him to pursue a career in acting after completing his studies.

Career

Hamza Ali Abbasi began his career as a theater actor, performing in various plays and productions in Islamabad and Lahore. He then transitioned to television and made his debut in 2010 with the drama series “Meray Dard Ko Jo Zuban Miley.” He gained popularity with his role in the drama “Pyarey Afzal” in 2013, which became a massive hit and established him as a leading actor in the Pakistani entertainment industry.

After the success of “Pyarey Afzal,” Hamza went on to appear in several other hit dramas, including “Mann Mayal” and “Alif.” He has also acted in films such as “Waar,” “Parwaaz Hai Junoon,” and “Maula Jatt 2.”

In addition to his acting career, Hamza Ali Abbasi is known for his political activism and social commentary. He has hosted several talk shows and debates on television and has written articles and blogs on topics such as religion, politics, and social justice. He is also a vocal advocate for human rights and has been involved in various social and humanitarian causes.

In 2019, Hamza Ali Abbasi announced that he would be taking a break from acting to focus on his religious and spiritual journey. He has since then returned to acting and is currently working on new projects.

Awards

Hamza Ali Abbasi has won several awards for his outstanding performances in television and film. Here are some of the notable awards he has received:

  • Lux Style Award for Best TV Actor for “Pyarey Afzal” in 2014
  • Hum Award for Best Actor for “Pyarey Afzal” in 2014
  • Hum Award for Best Supporting Actor for “Mann Mayal” in 2017
  • International Pakistan Prestige Awards for Best Supporting Actor for “Parwaaz Hai Junoon” in 2019
  • PISA (Pakistan International Screen Awards) for Best Actor in a Leading Role for “Parwaaz Hai Junoon” in 2020

Apart from these, Hamza Ali Abbasi has also been nominated for many other awards and has received critical acclaim for his performances.

Brand Ambassadors

Hamza Ali Abbasi has been a brand ambassador for several companies and brands in Pakistan. Some of the notable ones include:

  • Huawei Pakistan
  • QMobile
  • Pepsi Pakistan
  • Djuice Pakistan
  • Surf Excel Pakistan

Hamza has also worked as a model and has appeared in various print and television advertisements for brands such as Coca-Cola, Mobilink, and Samsung.

In addition to his work as a brand ambassador, Hamza Ali Abbasi is known for his social and political activism and has used his platform to raise awareness about various social issues. He has also been involved with organizations such as UNICEF and has supported various humanitarian causes.

Family
Hamza has one sister, Fazeela Abbasi, who is a dermatologist.

In August 2019, Hamza Ali Abbasi got married to Naimal Khawar, who is a former actress and painter. The couple has a son named Muhammad Mustafa Abbasi, who was born in August 2020.

Hamza is known for being a private person and does not often talk about his personal life in the media. However, he is known to be very close to his family and has often spoken about their

Upcoming Projects

As of my knowledge cutoff date of September 2021, Hamza Ali Abbasi had not announced any upcoming projects as he had taken a break from acting to focus on his religious and spiritual journey. However, he has since returned to acting and is currently working on new projects. As of my current date of May 2023, I do not have any information on his upcoming projects, as he has not made any announcements regarding his future work.

حمزہ علی عباسی ایک اداکار، ہدایت کار اور سابق سرکاری ملازم ہیں۔

حمزہ علی عباسی ایک پاکستانی اداکار، فلم ساز، اور ٹیلی ویژن میزبان ہیں۔ وہ 23 جون 1984 کو ملتان، پاکستان میں پیدا ہوئے۔ انہوں نے اپنے کیرئیر کا آغاز بطور تھیٹر اداکار کیا اور بعد میں ٹیلی ویژن اور فلم میں منتقل ہو گئے۔ ان کے چند قابل ذکر ٹیلی ویژن ڈراموں میں پیارے افضل، من مایال، اور الف شامل ہیں۔ انہوں نے وار، پرواز ہے جنون، اور مولا جٹ 2 جیسی فلموں میں بھی کام کیا۔

اپنے اداکاری کے کیریئر کے علاوہ، حمزہ علی عباسی اپنی سیاسی سرگرمی اور سماجی تبصرے کے لیے بھی جانے جاتے ہیں۔ وہ پاکستان میں مختلف سماجی اور سیاسی مسائل پر آواز اٹھاتے رہے ہیں اور ٹیلی ویژن پر کئی ٹاک شوز اور مباحثوں کی میزبانی کر چکے ہیں۔ انہوں نے مذہب، سیاست اور سماجی انصاف جیسے موضوعات پر مضامین اور بلاگز بھی لکھے ہیں۔

حمزہ علی عباسی اپنی اداکاری کے لیے کئی ایوارڈز جیت چکے ہیں جن میں لکس اسٹائل ایوارڈ برائے بہترین ٹی وی اداکار اور بہترین معاون اداکار شامل ہیں۔ ان کا شمار پاکستان کی تفریحی صنعت کے سب سے مقبول اور باصلاحیت اداکاروں میں ہوتا ہے۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم

حمزہ علی عباسی 23 جون 1984 کو ملتان، پاکستان میں ایک پنجابی مسلمان گھرانے میں پیدا ہوئے۔ سول سروسز میں اپنے والد کی ملازمت کی وجہ سے وہ لاہور اور راولپنڈی سمیت پاکستان کے مختلف شہروں میں پلے بڑھے۔ حمزہ نے ابتدائی تعلیم راولپنڈی سے مکمل کی اور پھر اپنی اعلیٰ ثانوی تعلیم کے لیے فضائیہ انٹر کالج اسلام آباد چلے گئے۔

انٹرمیڈیٹ کی تعلیم مکمل کرنے کے بعد حمزہ علی عباسی یونیورسٹی آف کولوراڈو، ڈینور سے بین الاقوامی تعلقات میں بیچلر کی ڈگری حاصل کرنے کے لیے امریکہ چلے گئے۔ اس کے بعد وہ پاکستان واپس آئے اور اسلام آباد کی قائداعظم یونیورسٹی سے بین الاقوامی تعلقات میں ماسٹرز کیا۔

یونیورسٹی میں اپنے وقت کے دوران حمزہ نے اداکاری اور تھیٹر میں گہری دلچسپی پیدا کی۔ انہوں نے یونیورسٹی کے مختلف تھیٹر پروڈکشنز میں حصہ لیا اور یونیورسٹی کے ڈرامہ کلب کے ممبر بھی رہے۔ اس کی وجہ سے وہ اپنی تعلیم مکمل کرنے کے بعد اداکاری میں اپنا کریئر بنانے میں کامیاب ہوئے۔

کیریئر

حمزہ علی عباسی نے تھیٹر اداکار کے طور پر اپنے کیریئر کا آغاز کیا، انہوں نے اسلام آباد اور لاہور میں مختلف ڈراموں اور پروڈکشنز میں پرفارم کیا۔ اس کے بعد انہوں نے ٹیلی ویژن کی طرف قدم بڑھایا اور 2010 میں ڈرامہ سیریز ‘میرے درد کو جو زوبان ملی’ سے اپنا آغاز کیا۔ انہوں نے 2013 میں ڈرامہ ‘پیارے افضل’ میں اپنے کردار سے مقبولیت حاصل کی، جو زبردست ہٹ ہوا اور انہیں پاکستانی انٹرٹینمنٹ انڈسٹری میں ایک معروف اداکار کے طور پر قائم کیا۔

‘پیارے افضل’ کی کامیابی کے بعد، حمزہ نے کئی دوسرے ہٹ ڈراموں میں کام کیا، جن میں ‘من مائل’ اور ‘الف’ شامل ہیں۔ انہوں نے ‘وار’، ‘پرواز ہے جنون’ اور ‘مولا جٹ 2’ جیسی فلموں میں بھی کام کیا ہے۔

اپنے اداکاری کے کیریئر کے علاوہ، حمزہ علی عباسی اپنی سیاسی سرگرمی اور سماجی تبصروں کے لیے بھی جانے جاتے ہیں۔ انہوں نے ٹیلی ویژن پر کئی ٹاک شوز اور مباحثوں کی میزبانی کی ہے اور مذہب، سیاست اور سماجی انصاف جیسے موضوعات پر مضامین اور بلاگ لکھے ہیں۔ وہ انسانی حقوق کے لیے آواز اٹھانے والے بھی ہیں اور مختلف سماجی اور انسانی کاموں میں شامل رہے ہیں۔

 سال 2019 میں، حمزہ علی عباسی نے اعلان کیا کہ وہ اپنے مذہبی اور روحانی سفر پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے اداکاری سے وقفہ لیں گے۔ اس کے بعد وہ اداکاری میں واپس آگئے ہیں اور فی الحال نئے پروجیکٹس پر کام کررہے ہیں۔

حمزہ علی عباسی ٹیلی ویژن اور فلم میں اپنی شاندار اداکاری کے باعث کئی ایوارڈز جیت چکے ہیں۔ یہاں کچھ قابل ذکر ایوارڈز ہیں جو انہیں ملے ہیں

2014 ‘پیارے افضل’ کے لیے بہترین ٹی وی اداکار کا لکس اسٹائل ایوارڈ
2014  ‘پیارے افضل’ کے لیے بہترین اداکار کا ہم ایوارڈ
2017  ‘من مائل’ کے لیے بہترین معاون اداکار کا ہم ایوارڈ
2019  ‘پرواز ہے جنون’ کے لیے بہترین معاون اداکار کے لیے انٹرنیشنل پاکستان پرسٹیج ایوارڈز
 (پاکستان انٹرنیشنل اسکرین ایوارڈز) 2020 میں ‘پرواز ہے جنون’ کے لیے ایک اہم کردار میں بہترین اداکار کے لیے

ان کے علاوہ حمزہ علی عباسی کو کئی دیگر ایوارڈز کے لیے بھی نامزد کیا گیا ہے اور انھیں اپنی پرفارمنس کی وجہ سے تنقیدی پذیرائی ملی ہے۔

برانڈ ایمبیسیڈر

حمزہ علی عباسی پاکستان میں کئی کمپنیوں اور برانڈز کے برانڈ ایمبیسیڈر رہ چکے ہیں۔ ان میں سے کچھ قابل ذکر ہیں

ہواوے پاکستان
کیو موبائل
پیپسی پاکستان
ڈیجوس پاکستان
سرف ایکسل پاکستان

حمزہ ایک ماڈل کے طور پر بھی کام کر چکے ہیں اور کوکا کولا، موبی لنک اور سام سنگ جیسے برانڈز کے مختلف پرنٹ اور ٹیلی ویژن اشتہارات میں نظر آ چکے ہیں۔

ایک برانڈ ایمبیسیڈر کے طور پر اپنے کام کے علاوہ، حمزہ علی عباسی اپنی سماجی اور سیاسی سرگرمی کے لیے جانے جاتے ہیں اور انہوں نے اپنے پلیٹ فارم کو مختلف سماجی مسائل کے بارے میں بیداری پیدا کرنے کے لیے استعمال کیا ہے۔ وہ یونیسیف جیسی تنظیموں کے ساتھ بھی شامل رہا ہے اور مختلف انسانی مقاصد کی حمایت کرتا رہا ہے۔

خاندان

حمزہ علی عباسی ملتان، پاکستان میں ایک پنجابی مسلمان گھرانے میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد، مظہر علی عباسی، ایک سرکاری ملازم تھے اور ان کی والدہ، بیگم نسیم اختر چوہدری، پنجاب کی صوبائی اسمبلی کی رکن تھیں۔ حمزہ کی ایک بہن ہے، فضیلہ عباسی، جو ماہر امراض جلد ہیں۔

اگست 2019 میں حمزہ علی عباسی نے نیمل خاور سے شادی کی، جو ایک سابق اداکارہ اور پینٹر ہیں۔ جوڑے کا ایک بیٹا ہے جس کا نام محمد مصطفیٰ عباسی ہے جو اگست 2020 میں پیدا ہوا تھا۔

حمزہ ایک پرائیویٹ شخص ہونے کی وجہ سے جانے جاتے ہیں اور اکثر میڈیا میں اپنی ذاتی زندگی کے بارے میں بات نہیں کرتے۔ تاہم، وہ اپنے خاندان کے بہت قریب کے طور پر جانا جاتا ہے اور اکثر ان کے بارے میں بات کرتا ہے۔

آنے والے منصوبے

میری معلومات کے مطابق ستمبر 2021 کی کٹ آف ڈیٹ، حمزہ علی عباسی نے آئندہ کسی پروجیکٹ کا اعلان نہیں کیا تھا کیونکہ انہوں نے اپنے مذہبی اور روحانی سفر پر توجہ مرکوز کرنے کے لیے اداکاری سے وقفہ لیا تھا۔ تاہم اس کے بعد وہ اداکاری میں واپس آگئے ہیں اور فی الحال نئے پروجیکٹس پر کام کر رہے ہیں۔ مئی 2023 کی میری موجودہ تاریخ کے مطابق، میرے پاس ان کے آنے والے پروجیکٹس کے بارے میں کوئی معلومات نہیں ہے، کیونکہ اس نے اپنے مستقبل کے کام کے بارے میں کوئی اعلان نہیں کیا ہے۔

 

.

/ Published posts: 1249

Shagufta Naz is a Multi-disciplinary Designer who is leading NewzFlex Product Design Team and also working on the Strategic planning & development for branded content across NewzFlex Digital Platforms through comprehensive research and data analysis. She is currently working as the Principal UI/UX Designer & Content-writer for NewzFlex and its projects, and also as an Editor for the sponsored section of NewzFlex.

Twitter
Facebook
Youtube
Linkedin
Instagram