پاکستان کے علاقے گلگت بلتستان سے لاپتہ بھارتی خاتون کی لاش برآمد ہوئی ہے۔

پاکستان کے علاقے گلگت بلتستان سے لاپتہ بھارتی خاتون کی لاش برآمد ہوئی ہے۔

پاکستان کے علاقے گلگت بلتستان سے لاپتہ بھارتی خاتون کی لاش برآمد ہوئی ہے۔

 

 

پاکستانی حکام کو ایک 28 سالہ خاتون کی لاش ملی ہے، جو 15 جولائی کو ہندوستان کے زیر کنٹرول علاقے کارگل سے لاپتہ ہو گئی تھی۔

ڈپٹی کمشنر (ڈی سی) محمد جعفر کے مطابق خاتون کی لاش گلگت بلتستان کے ضلع کھرمنگ سے ملی ہے۔ انہوں نے کہا کہ خاتون کی لاش دریائے کارگل سے نکال کر کھرمنگ میں دفنائی گئی۔

انہوں نے کہا کہ ڈی این اے ٹیسٹنگ کے ذریعے خاتون کی شناخت کی تصدیق ہونے کے بعد دونوں ممالک کی وزارت خارجہ کے درمیان رابطے کے بعد لاش کو بھارت واپس کیا جا سکتا ہے۔

کھرمنگ کے ایک رہائشی قاسم نے بتایا کہ خاتون کو مسلمان دفن کیا گیا تھا۔

اس سے قبل کارگل پولیس اسٹیشن کی جانب سے خاتون کی تصویر پر مشتمل ایک پمفلٹ ہندوستان کی جانب سے جاری کیا گیا تھا۔ لاش کی بازیابی کے لیے پمفلٹ جی بی انتظامیہ کو بھی بھجوا دیا گیا۔

پمفلٹ میں کہا گیا ہے کہ بلقیس بانو کے نام سے شناخت ہونے والی خاتون کا قد پانچ فٹ تھا اور اس نے سرخ سویٹر کے ساتھ سبز کپڑوں میں ملبوس تھا۔ اس میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ 15 جولائی کو اکچمل میں اپنے گھر سے لاپتہ ہوگئی تھی۔

بلتستان عوامی ایکشن کمیٹی کے چیئرمین نجف علی نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ پرانا اسکردو کرگل روڈ بند ہونے کی وجہ سے لائن آف کنٹرول کے گرد و نواح کے لوگوں کو ایسے حالات میں شدید مشکلات کا سامنا ہے۔ انہوں نے دونوں ممالک میں مقامی لوگوں کی سہولت کے لیے تاریخی راستوں کی بحالی پر زور دیا۔

/ Published posts: 3258

موجودہ دور میں انگریزی زبان کو بہت پذیرآئی حاصل ہوئی ہے۔ دنیا میں ۹۰ فیصد ویب سائٹس پر انگریزی زبان میں معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ لیکن پاکستان میں ۸۰سے ۹۰ فیصد لوگ ایسے ہیں. جن کو انگریزی زبان نہ تو پڑھنی آتی ہے۔ اور نہ ہی وہ انگریزی زبان کو سمجھ سکتے ہیں۔ لہذا، زیادہ تر صارفین ایسی ویب سائیٹس سے علم حاصل کرنے سے قاصر ہیں۔ اس لیے ہم نے اپنے زائرین کی آسانی کے لیے انگریزی اور اردو دونوں میں مواد شائع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ جس سے ہمارےپاکستانی لوگ نہ صرف خبریں بآسانی پڑھ سکیں گے۔ بلکہ یہاں پر موجود مختلف کھیلوں اور تفریحوں پر مبنی مواد سے بھی فائدہ اٹھا سکیں گے۔ نیوز فلیکس پر بہترین رائٹرز اپنی سروسز فراہم کرتے ہیں۔ جن کا مقصد اپنے ملک کے نوجوانوں کی صلاحیتوں اور مہارتوں میں اضافہ کرنا ہے۔

Twitter
Facebook
Youtube
Linkedin
Instagram